قرآنی آیات: شکر گزاری کی اہمیت

اللہ تعالی نے قرآن میں جا بجا اپنے احسانات پر شکر ادا کرنے کی تلقین کی ہے۔ ایک مسلمان جب اپنے اردگرد نظر دوڑاتا ہے اور اپنی زندگی پر غور کرتا ہے تو اسے یہ حقیقت معلوم ہوتی ہے کہ انسان کے اپنے اختیار میں کچھ بھی نہیں اور  اس کی پوری زندگی مختلف بیساکھیوں اور اسباب میں جتڑی ہوئی ہے۔ سانس لینے کے لئے ہوا اور ہوا میں موجود آکسیجن سے لے کر زمین کی کشش ثقل انسان کو یہ باور کراتی ہے کہ انسان ایک مکمل محتاج مخلوق ہے اور اس کی بچت اسی میں ہے کہ وہ اللہ تعالی کے آگے جھک جائے۔ اللہ کے آگے جھکنے اور اس کی بڑائی ماننے کی سب سے بڑی علامت احسان مندی ہے۔ 

قرآنی آیات

"‘‘اوَمَن شَكَرَ فَإِنَّمَا يَشْكُرُ لِنَفْسِهِ ۖ وَمَن كَفَرَ فَإِنَّ رَبِّي غَنِيٌّ كَرِيمٌ (سورہ النمل 40

‘‘اور جو کوئی شکر کرتا ہے اس کا شکر اس کے اپنے ہی لیے مفید ہے، ورنہ کوئی ناشکری کرے تو میرا رب بے نیاز اور اپنی ذات میں آپ بزرگ ہے’’۔


فَاذْكُرُونِي أَذْكُرْكُمْ وَاشْكُرُوا لِي وَلَا تَكْفُرُونِ (سورۃ البقرہ ۱۵۲
لہٰذا تم مجھے یاد رکھو، میں تمہیں یاد رکھوں گا اور میرا شکر ادا کرو، کفران نعمت نہ کرو ۔